124

کیا تمام صحابہ جنتی ہیں؟ ۔ حافظ محمد زبیر

دوست کا سوال ہے کہ کیا تمام صحابہ جنتی ہیں؟ جواب: جی ہاں، تمام صحابہ جنتی ہیں لیکن صحابی اسے نہیں کہتے ہیں کہ جسے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی محض صحبت نصیب ہوئی ہو، وہ تو منافقین کو بھی حاصل تھی۔ صحابی سے مراد وہ شخص ہے جو حالت ایمان میں رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم سے ملا ہو اور حالت ایمان ہی میں اس کی وفات ہوئی ہو۔

تمام صحابہ کے جنتی ہونے کی دلیل قرآن مجید کی یہ آیت ہے: {لَا يَسْتَوِي مِنْكُمْ مَنْ أَنْفَقَ مِنْ قَبْلِ الْفَتْحِ وَقَاتَلَ أُولَئِكَ أَعْظَمُ دَرَجَةً مِنَ الَّذِينَ أَنْفَقُوا مِنْ بَعْدُ وَقَاتَلُوا وَكُلًّا وَعَدَ اللَّهُ الْحُسْنَى وَاللَّهُ بِمَا تَعْمَلُونَ خَبِيرٌ} [الحديد:10] ترجمہ: جن لوگوں نے تم میں سے فتح مکہ سے پہلے جہاد اور انفاق کیا، ان کا درجہ ان سے بہت بڑھ کر ہے کہ جنہوں نے فتح مکہ کے بعد جہاد اور انفاق کیا۔ اور اللہ عزوجل نے دونوں جماعتوں [یعنی فتح مکہ سن 8 ھ سے پہلے اور فتح مکہ کے بعد والوں] سے جنت کا وعدہ کر رکھا ہے۔

صحابہ کے جنتی ہونے کی دلیل قرآن مجید کی یہ آیت بھی ہے: {وَالسَّابِقُونَ الأَوَّلُونَ مِنَ الْمُهَاجِرِينَ وَالأَنصَارِ وَالَّذِينَ اتَّبَعُوهُم بِإِحْسَانٍ رَّضِيَ اللّهُ عَنْهُمْ وَرَضُواْ عَنْهُ وَأَعَدَّ لَهُمْ جَنَّاتٍ تَجْرِي تَحْتَهَا الأَنْهَارُ خَالِدِينَ فِيهَا أَبَدًا ذَلِكَ الْفَوْزُ الْعَظِيمُ} [التوبة:100] ترجمہ: اور مہاجرین اور انصار میں سے ایمان میں سبقت لے جانے والے اور پہل کرنے والے اور پھر جنہوں نے ان پہلوں کی اچھے طریقے سے اتباع کی تو ان دونوں سے اللہ راضی ہے اور وہ اللہ سے راضی ہیں۔ اور ان کے لیے اللہ عزوجل نے ایسی جنتیں تیار کر رکھی ہے کہ جن کے دامن میں نہریں بہتی ہیں کہ جن میں وہ ہمیشہ ہمیش رہیں گے اور یہ بڑی کامیابی ہے۔

اس کی دلیل صحیح مسلم کی یہ حدیث بھی ہے کہ آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: لا يدخل النار أحد ممن بايع تحت الشجرة. ترجمہ: جس شخص نے بھی بیعت رضوان میں حصہ لیا، وہ آگ میں داخل نہ ہو گا۔ اس کی دلیل صحیح بخاری کی یہ روایت بھی ہے: أول جيش من أمتي يغزون البحر قد أوجبوا…أول جيش من أمتي يغزون مدينة قيصر مغفور لهم… ترجمہ: میری امت کا پہلا لشکر جو سمندر کے رستے سفر کر کے جہاد کرے گا [یعنی جزیرہ قبرص کا] تو اس نے اپنے لیے جنت واجب کر لی۔ اور میری امت کا پہلا لشکر جو قیصر کے شہر [قسطنطنیہ] پر یلغار کرے گا تو اس کی بخشش کر دی گئی۔ اسی طرح کی بشارت بعض روایات میں اصحاب بدر کے بارے بھی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں